پرویزمشرف وہیل چیئر پر، سابق صدر کی التوا کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

2
سابق صدر پرویز مشرف کیخلاف سنگین غداری کیس میں خصوصی عدالت نے پرویز مشرف کے وکیل کی پیشی کیلئے ایک موقع دینے کی استدعا پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق صدر پرویز مشرف کیخلاف سنگین غداری کیس کی سماعت ہوئی، جسٹس طاہرہ صفدر کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے سماعت  کی۔

پرویزمشرف کے وکیل نے پیشی کیلئے ایک اورموقع دینے کی استدعا کرتے ہوئے کہا کہ پرویزمشرف زندگی کی جنگ لڑرہے ہیں، وہ ذہنی اور جسمانی طورپراس قابل نہیں کہ ملک واپس آسکیں، وکیل صفائی کا کہنا تھا کہ ہرتاریخ  پر کیس کے التوا کی استدعا کرنے پر شرمندگی ہوتی ہے۔

سابق صدر کے وکیل نے کہا کہ پرویزمشرف وہیل چیئر پر ہیں اورچل بھی نہیں سکتے، ایک موقع اوردیا جائے تاکہ وہ خود عدالت میں پیش ہوسکیں۔ جسٹس طاہرہ صفدر نے کہا کہ سپریم کورٹ نے تو اس معاملے پر حکم جاری کررکھا ہے، وکیل صفائی نے کہا کہ عدالت عظمیٰ کے حکم سے آگاہ ہوں، انسانی ہمدردی کے تحت استدعا کررہا ہوں۔

جسٹس طاہر ہ صفدر نے استغاثہ کے وکیل ڈاکٹر طارق حسن کے ملزم کی صحت پردلائل طلب کرتے ہوئے استفسار کیا کہ کیاآپ ملزم کی جسمانی صحت کیخلاف بات کررہے ہیں؟جسٹس نذر اکبر نے استفسار کیا کہ کیاآپ پرویزمشرف کی صحت کی تصدیق کراناچاہتے ہیں؟ وکیل استغاثہ نے کہا کہ جی نہیں ہم ایسا نہیں چاہتے،عدالت نے ملزم کا بیان ویڈیو لنک کے ذریعے کرنے کا موقع دیا،عدادلت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد پرویزمشرف کی التوا کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا جوکچھ دیرمیں سنایا جائے گا۔